-

19 October 2014

Ishaq or taj mahal

"عشق اور تاج محل"
یہ صدیوں سے جاگتا عشق یہ زمانوں سے بے خواب عشق
یہ بیتابیوں میں ڈوبا ہوا سنگ۔ مر مر کا تاج عشق
یہ یادگار کہ فن کا اوج_ کمال کسی کی صنعائی شہکار عشق
تاج سے روح_ محبت جھلکتی ھے سفید چاندنی کے در و دیوار عشق
یہ سانس لیتا ہوا تاج محل مر مر کی رگوں میں دوڑتا عشق
دلوں کی آرزؤں کا مجسم ھجر و فراق کی یادگار عشق

حقیقت کا روپ دھارے ہوئے جگمگاتا چمکتا تاج عشق
♥♥♥♥♥

Newer post

Followers

♥"Flag Counter"♥

Flag Counter

facebook like slide right side

like our page

pic headar