-

10 March 2015

agerchay main kafs main hon

اگرچہ مَیں ' قفَس میں ھُوں
۔۔۔۔۔۔
 کوئی آزاد ھے ' مُجھ میں
جو مُجھ کو ' صَید رکھتا ھے
 ۔۔۔۔۔
 عجب صَیّاد ھے ' مُجھ میں
ضمِیر ِ زِندہ ' کی صُورت
 ۔۔۔۔۔
مِرا اُستاد ھے ' مُجھ میں
نہیں اب مَیں ' نہیں ساگر
 ۔۔۔۔۔
 کِہ وہ آباد ھے ' مُجھ میں
محبّت زاد ھے ' مُجھ میں
۔۔۔۔۔۔
 کوئی فرھاد ھے ' مُجھ میں
نہیں وِیران ' اندر سے
۔۔۔۔۔۔
 خُدا کی یاد ھے ' مُجھ میں
جو ھر دَم ' ساتھ رھتا ھے
۔۔۔۔۔
مِرا ھم زاد ھے ' مُجھ میں
مَیں خُود سے ' کٹ نہیں سکتا
۔۔۔۔۔۔

 مِری بُنیاد ھے ' مُجھ میں
♥♥♥♥♥

Newer post

Followers

♥"Flag Counter"♥

Flag Counter

facebook like slide right side

like our page

pic headar