-

19 November 2014

us husan k peykar ko koch payar b aa jay



اُس حُسن کے پیکر کو کچھ پیار بھی آجائے 
ہونٹوں پہ محبّت کا اِقرار بھی آجائے
لبریز ہو چاہت سے پیمانۂ دِل اُس کا 
ہونٹوں سے چَھلک کر کچھ اِظہار بھی آجائے
رُت آئی ہے برکھا کی ، ہیں پُھول کھلے دِل میں 
کیا خُوب ہو ایسے میں دِلدار بھی آ جائے
♥♥♥♥♥

Newer post

Followers

♥"Flag Counter"♥

Flag Counter

facebook like slide right side

like our page

pic headar