-

30 December 2014

gul e chaman ka yeh hall sun kar


گل چمن کا یہ حال سن کر
تمیں لگے گا میں بےوفا ہوں
اداس کلیوں کو چھوڑ کر میں
نئی بہاروں کو ڈھونڈتا ہوں
مگر
حقیقت میں اس چمن کے
تمام پھولوں کی خوائشوں کا
حسیں موسم کی بارشوں کا
نہ میرے دل پر اثر ہوا ہے
نہ میرے دل پر اثر ہوا تھا
میں آج بھی اس نئے چمن میں
پرانے قصے سنا رہا ہوں
یقین نہ آئے تو پلٹ کر دیکھو
وہیں کھڑا تھا
وہیں کھڑا ہوں

♥♥♥♥♥

Newer post

Followers

♥"Flag Counter"♥

Flag Counter

facebook like slide right side

like our page

pic headar